ملک داخلی استحکام کی طرف بڑھ رہا ہے؟

مشرقی و مغربی سرحدات پر ابھرتے خطرات اور عالمی طاقتوں کے ساتھ بڑھتی ہوئی پیکار ہمیں ایک قوم کی طرح متحد کر دے گا یا پھر ہمارا داخلی انتشار مملکت خداداد کو پھر کسی حادثہ سے دوچار کرے گا ؟بظاہر ایسا لگتا ہے کہ سن دوہزار اٹھارہ کی الیکشن مہم…

سیاسی ارتقاء کا ابطال

حالیہ عدالتی فعالیت کی بدولت ملک میں ستر سالوں سے جاری سیاسی کشمکش فیصلہ کن مر حلہ تک آ پہنچی ہے لیکن اسٹیٹس کو کی قوتیں اس  کی جدلیات کو تحلیل کر کے اسی پرانی ڈگر پہ لانا چاہتی ہیں جس میں سیاستدانوں کو اپنی حقیرانہ  حثیت پہ قانع ہونا پڑے…

فاٹا اصلاحات اور ہماراقومی رویہ

سیاسی قیادت کی بے ثباتی نے فاٹا اصلاحات جیسے حساس معاملہ کو روایتی طور طریقوں میں الجھا کے ہمارے اجتماعی مصائب میں ایک نئے تنازعہ کا اضافہ کر دیا،کالا باغ ڈیم کے بعد اب فاٹا کو قومی دھارے میں لانے کا عمل بھی سیاسی عدواتوں،دوطرفہ الزام…

یروشلم اور دنیا کے تین بڑے مذاہب

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ،جارج واشنگٹن کی تصویر تلے کھڑے ہو کے یروشلم کو اسرائیل کا دارلحکومت تسلیم کر تے ہوئے جب یہ کہہ رہے تھے  کہ اس کام کے لئے یہی موزوں وقت  ہے تو بلاشبہ دنیا کے معروضی حالات انکے اس فیصلہ کی تصدیق کر رہے تھے،جس نے مغرب کے…

سعودی سلطنت کا مستقبل

سعودی عرب مالی بحران کے بعد اب انتظامی انتشار کے دلدل میں اترنے والا ہے۔ شاہی خاندان کے حالیہ تنازعات انہی انتظامی مشکلات کا مظہر ہیں۔آل سعود نے 1930 میں  شہنشاہ کی جانشینی کا جو میکانزم تشکیل دیا تھا ،وہ خاندان کی عددی وسعت کی وجہ سے قابل…

بنیادی جمہوریت کا استرداد

خیبر پختون خواہ  کے جس بلدیاتی سسٹم کو عمران خان نمونہ کے طور پہ پیش کرتے پھرتے ہیں اسے حکمران اشرافیہ کی  جمود پرور سوچ  نے ڈھائی سالوں کے اندر مفلوج بنا دیاہے،پی ٹی آئی حکومت نے ترقیاتی سکیموں کو ایم پی ایز کی بجائے بلدیاتی اداروں کے…

معاشرے کے اخلاقی زوال میں پولیس کا کردار

خیبر پختون خوا کی ابھرتی ہوئی پولیس فورس نے ستائیس اکتوبر دوہزار سترہ کی صبح  درابن تحصیل کے مضافاتی گاؤں گرہ مٹ میں مسلح افراد کی درندگی کا نشانہ بننے والی 16سالہ دوشیزہ شریفاں بی بی کے مقدمہ کی تفتیش "مکمل" کر کے چالان داخل عدالت کر دیا،…

کشمکش فیصلہ کن مرحلے میں داخل

جس سرعت سے سیاسی ماحول میں انتشار بڑھا رہا ہے،اس سے تو یہی لگتا ہے کہ سویلین اور مقتدرہ کے درمیان ستّر سالوں سے جاری کشمکش کسی فیصلہ کن مرحلہ میں داخل ہونے والی ہے۔بدھ کے روز مسلم لیگ نون  نے پانامہ نظرثانی کیس کے فیصلہ اور سپریم کورٹ کے…

بلوچستان تنازعہ : ذرائع ابلاغ ہدف کیوں؟

بلوچستان میں ریاستی اداروں نے اخبارات اور ٹی وی چینلز کو ایڈوائزری جاری کرکے بلوچ علیحدگی پسندوں کی خبروں کی اشاعت رکوادی ہے،جس کے ردعمل میں کالعدم بلوچ لبریشن فرنٹ نے پمفلٹ شائع کر کے اخبارات اور الیکٹرانکس میڈیا سے وابستہ صحافیوں کو بلیک…

زندگی ہم تیرے داغوں سے رہے شرمندہ

ڈیرہ اسمٰعیل خان کے  مضافاتی گاؤں گرہ مٹ میں لگ بھگ  دس مسلح افراد کی طرف  ذاتی دشمنی کی بنیاد پر 16 سالہ دوشیزہ کو برہنہ کر کے گاؤں کی گلیوں میں گھمایا گیا مگر  اس دوران مجبور و بے کس لڑکی کی مدد کو پولیس اور عوام میں سے کوئی نہیں پہنچا۔…