برگد کے نیچے پھول

پاکستانی سیاست کولگے فکری سمجھوتوں کے کینسر سے لڑتے ہوئے ، میر حاصل خان بزنجو نے ہمیشہ حوصلوں کو بڑھایا لیکن جسمانی کینسر نے ان کی فانی زندگی مختصر کر دی۔ نال (خضدار) کی مٹی کی خوشبو بن جانے کے بعد بھی میر حاصل خان بزنجو کی ہمت اور جرات اہل…

پارلیمانی یا صدارتی: پاکستان میں کون سا نظام بہتر ہے؟

آزادی کے 73سالوں کے بعد بھی پاکستان میں یہ بحث جاری ہے کہ ملک کے لئے پارلیمانی نظام موزوں ہے یا صدارتی نظام مناسب ہے۔بحث و مباحثہ تو بری بات نہیں لیکن جب یہ باتیں مقتدر حلقوں کی جانب سے آتی ہیں تو اپنی تمام تر خامیوں کے ساتھ اچھا خاصا چلتا…

پاکستان کے پارلیمانی بانیان

پاکستان کی تاریخ لکھنے والے مؤرخین اور پاکستان کے حوالے سے پولیٹیکل سائنس کے سکالرز نے ملک کی پارلیمانی تاریخ پر بہت کم دھیان دیا ہے۔ یہ دانستہ نظرانداز کرنے کی بات ہے یا پھر اقتدار کے تھیٹر کا باقی ماندہ سکرپٹ اتنا مزے دار تھا کہ پارلیمنٹ…

سینٹ آف پاکستان : ارتقاء اور تاریخ

سینٹ آف پاکستان کا قیام 1973 ء کے آئین کے تحت عمل میں آیا اور پہلی سینٹ نے 6 اگست 1973 ء کو اسلام آباد میں سٹیٹ بنک آف پاکستان کی عمارت میں اپنے کام کا آغاز کیا۔ 45 رکنی سینٹ کا پہلا انتخاب قومی اسمبلی(وفاقی دارا لحکومت اور قبائلی علاقہ جات…

پاکستان میں قانون کی مبہم راہیں

ٓٓآج کل بات بات پر قانون کی حکمرانی کے خواب بنے جاتے ہیں۔ پھر یہ خواب خواہشوں کی گرداب میں کہیں کھو جاتے ہیں۔ قدیم سماج میں قبائلی سرداروں کے احکامات، بادشاہوں کے فرمودات اور مذہبی رہنماؤں کے فتوے حرف آخر ٹھہرتے تھے۔ جدید ریاستوں کی تشکیل…

کیا پارلیمنٹ واقعی سپریم ہے؟

برطانوی پارلیمنٹ کو دنیا بھر کی پارلیمانوں کی ماں کہا جاتا ہے۔ جمہوری اداروں کا جنم اور ارتقاء اپنے دامن میں کئی نشیب و فراز کا امین ہے۔ اقتدار ِ اعلیٰ کے مغربی تصورات بادشاہت سے نکل کر ان اداروں کی امانت بنے۔ اس سفر میں کبھی بادشاہوں کے سر…

مختاریا ! گل ودھ گئی اے

پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں ـقومی اسمبلی اور سینٹ کے بجٹ اجلاس ـ محدود اراکین کے ساتھ جاری ہیں۔ قائد حزب اختلاف سمیت اپوزیشن کے فرنٹ بینچ سے سابق وزیر اعظم سابق اسپیکر پارٹی کے جنرل سیکرٹری اور سیکرٹری اطلاعات کے علاوہ متعدد اراکین کرونا…

کرونا عہد میں ڈگمگاتی وفاقیت (آخری قسط)

اس بارے میں دو آرا ء نہیں کہ وفاقیت کا پھول جمہوری ماحول ہی میں کھِلتا ہے۔ایمرجنسی ، بحران اور قدرتی آفات اسے خدشوں ، تنقید اور الزامات کے تھپیڑوں میں دھکیل دیتے ہیں۔ دنیا بھر کے 193 ممالک میں فقط 28 وفاقی انداز میں منظم ہیں۔ تاہم یہ دنیا…

کرونا عہد میں سوشل ورک (تیسری قسط)

آزمائش کے لمحوں میں دوسروں کے کام آنا انسانی جبلت ہے۔ پاکستانیوں کی اس حوالے سے شہرت بے مثال خیرات کرنے والوں کی ہے ۔ کرونا کی وباء آئی تو ہم نے دیکھا کہ سبھی اپنے تیئں کچھ نہ کچھ کرتے نظر آئے ۔ راشن کی تقسیم ایسے مواقع پر خوب ہوتی ہے اور…

کرونا عہد کی چند سچی کہانیاں (قسط دوم)

کرونا عہد میں جب روئے زمین پر انسانی سرگرمیاں محدود ہوئیں تو اکثریت نے سیارہ سائبریا پر ہجرت کرلی۔ اس سیارے وسعت بے پناہ ہے۔ سائبراعداد و شمار پر کام کرنے والے اداروں کے مطابق اس وقت دنیا کی کل آبادی 7اعشاریہ 8 ارب کے لگ بھگ ہے۔ اور اس میں…