working
   
 
   
Untitled Document
موجودہ شمارہ

Untitled Document


Untitled Document
مراسلات
اگلا شمارہ

ساجدہ شبنم خاں: شاہدرہ ، لاہور

گزشتہ کچھ عرصہ سے 'تجزیات' کی باقاعدہ قاری ہوں۔اس میں اکثر ایسے سنجیدہ نوعیت کے مضامین شائع ہوتے ہیں جس کے ذریعے نہ صرف ملکی اور بین الاقوامی حالات و واقعات سے آگہی ہوتی ہے بلکہ ملک میں جاری شورش اور داخلی بُحران کے پسِ پردہ کارفرما قوتوں کا بھی پتہ چلتا ہے۔ 'تجزیات' ایسی حقیقتوں سے پردہ چاک کرتا ہے جن کا فی زمانہ بیان کرنے کی جرأت کسی اور رسالے میں نظر نہیں آتی۔ مارچ کے شمارے میں محمد عامر رانا کا مضمون ' انتہا پسندی اور دانشوروں کا ردعمل، موضوعی مطالعہ'' جبکہ وقار احمد کے مضمون ' افغان جنگ کو پاکستان منتقل کرنے کی حکمتِ عملی' نے بے حد متاثر کیا۔ لو پوری کا مضمون '' دیو بندکا اسلامی مکتبۂ فکر: ماضی اور مستقبل کے آئینے میں' بھی خاصے کی چیز تھا۔ میری دعائیں اور نیک خواہشات ''تجزیات'' کے ساتھ ہیں۔