Browsing Category

فیچرز

صلح کل

کتاب: صلح کل تدوین : طاہر مہدی تبصرہ : علی بابا تاج طاہر مہدی پاکستان کے معاصر لکھاریوں میں معتبر نام ہیں جن کے مضامین اور کالمز موقر جرائد میں شائع ہوتے ہیں ۔ انہوں نے صلح کل کے نام سے ایک کتاب تدوین کی ہے ۔ جس میں تکثیریت کی خوبیوں کو…

امرتا پریتم اور محبت کی تثلیث

ایک زمانہ تھا کہ امرتا پریتم کی نظم کا یہ مصرعہ "اج آکھاں وارث شاہ نوں"  زبان زد خاص و عام تھا۔ اس مصرعے کی گونج ہم آج بھی سنتے ہیں۔یہ گونج اہل پنجاب کے دلوں کی پکار بن کر ابھری تھی۔اس نظم میں کیا ہے؟ ایک عورت کی پکار اور چیخ، ایک للکار  …

افضل احسن رندھاوا: پنجابی ادب کی عظیم روایت کے امین

پنجابی زبان و ادب میں افضل احسن رندھاوا کی حیثیت وہی ہے جو ہسپانوی زبان میں لورکا اور عربی زبان میں فلسطینی شاعر محمود درویش کی، یا اردو میں فیض کی۔ تینوں کے ہاں انقلاب، احتجاج اور محبت کے مضبوط عناصر کا اشتراک پایا جاتا ہے۔ یہ عناصر اتنے…

مولانا عبیداللہ سندھی(حالات، تعلیمات اور سیاسی افکار)

مغل بادشاہ اکبر برصغیر کی تاریخ میں ایک بڑی تبدیلی کی علامت ہے جسے مغرب اور برصغیر کے مسلم اور غیر مسلم مورخین نے مختلف زاویوں سے دیکھا ہے۔ مولانا عبیداللہ سندھی نے اکبر کے سیاسی، سماجی اور مذہبی رجحانات اور فیصلوں پر ایک غیر جانبدار وضاحت…

شناخت اور عالمی سماج

اپنے ناول ’’سمرقند‘‘ سے عالمی شہرت پانے والے امین مالوف ایک سماجی دانشور کی حیثیت سے جانے جاتے ہیں۔ ان کی زیرنظر کتاب شناخت کے بنیادی حوالوں اور ان میں ترجیحات کے تعین کے سماجی، ثقافتی اور نفسیاتی محرکات کا تجزیہ کرتی ہے۔ مصنف نے متعدد…

غربت اور غلامی: خاتمہ کیسے ہو

اردو میں اگر کوئی کتاب معاشیات یا سماجی علوم پر نظر آئے تو پہلا گمان یہ ہوتا ہے کہ یہ کسی انگریزی کتاب کا ترجمہ ہوگا۔ اگر کوئی طبع زاد کتاب ہو تو یقیناً حیرت ہوتی ہے۔ سماجی اور معاشتی امور کے ماہر ذیشان ہاشم کی کتاب ’’غربت اور غلامی: خاتمہ…

قربانی: تاریخ اور مذاہب کے پس منظر میں

قربانی کا تصور تمام مذاہب میں رہا ہے اور اس کا مقصد خالقِ کائنات کی رضا اور آلام و مصائب سے نجات رہا ہے۔ قربانی کے مذہبی تصور کی کئی جہتیں ہیں جنہیں سید ثاقب اکبر،چیئرمین البصیرہ اکیڈمی نے اس مضمون میں سمجھنے کی کوشش کی ہے۔ بعدازاں اس پر…

نلتر نامہ

نومل سے گزرتے ہوئے تقریباََ آخر میں راستہ ایک دم بائیں طرف مڑا۔یہ نلتر کی طرف جاتی سڑک تھی ۔ سورج بالکل ہمارے سر کے اوپر تھا۔دھوپ مچل رہی تھی اور گاڑی کی کھڑکیوں سے اندر لپک رہی تھی۔ساتھ ہی اوپر بلندیوں سے اترتی دبی دبی ہوا تھی۔جس میں ٹھنڈک…

وادئ سوات کی دو ضلعوں میں تقسیم

سوات میں دہشت کے راج اور 2010ء کے بد ترین سیلاب کے بعد اس وقت کی حکومت نے ضلع سوات کو دو ضلعوں میں تقسیم کرنے کی تجویز دی تھی تاہم تاحال اس پر عمل نہیں ہوسکا۔ ایک ایسے ملک میں جہاں اٹھارہ سالوں سے مردم شماری نہیں کی گئی ہو بڑا مشکل ہے کہ…

کراچی آپریشن اورشہرمیں فعال طالبان گروہ

شہرمیں طالبان شدت پسندوں کی آمد 2010ء کے اوائل سے شروع ہوئی جب شہرمیں لسانی بنیادوں پر تشدد اورہلاکتیں روزانہ کامعمول تھی اورطالبان گروہوں نے امن وامان کی ابترصورت حال کافائدہ اٹھاتے ہوئے اپنی تنظیمی ڈھانچے کومنظم کیا اور2011ء کے وسط تک…