نجیب محفوظ: عربی ادب کا تابندہ ستارہ

بیسویں صدی میں مسلم دنیا کے اندر ناول نگاری کی صنف میں کئی بڑے نام سامنے آئے۔ نجیب محفوظ ان میں سے ایک مشہور شخصیت ہیں۔ انہیں نوبل انعام سے نوازا گیا اور ان کے ناولوں کے تراجم دنیا کی متعدد زبانوں میں کیے گئے۔ اس عظیم ادیب کی شخصیت اور فن…

پابندیوں کے باوجود ایران تیل کیسے بیچتا ہے؟

جولائی 2015 میں چھ بڑی طاقتوں کے ایران کے ساتھ ایک دہائی پر محیط مشکل مذاکرات کے کے بعد ایک جوہری معاہدے پر اتفاق ہوا جسے ساری دنیا میں تاریخی کاوش کہا گیا تھا۔ امریکا نے پچھلے سال نومبر میں خود کو اس معاہدے سے یہ کہہ کر الگ کرلیا کہ خطے…

پاکستان میں شناخت پسند سیاست کے رجحانات

سماجیات کے سائنسدانوں کے مطابق دنیا میں آئیڈیالوجی کی سیاست کا مرحلہ ختم ہوچکا ہے۔ اب ہر جگہ شناخت پسند سیاست کی گہما گہمی ہے۔ آئیڈیالوجی کا دائرہ عمل وسیع ہوتا ہے اور یہ کامل سماج کی تشکیل کی سعی کرتی ہے۔ جبکہ شناخت پسند سیاست میں احترام…

ہزارہ شیعہ کو کون مارتا ہے؟

ہزارہ وہ بدقسمت قوم ہیں جنہوں نے لگ بھگ ڈیڑھ صدی قبل امن کا خواب لے کر کوئٹہ کی جانب ہجرت کی تھی۔ لیکن اس خواب کی تعبیر اس قدر بھیانک نکلے گی انہوں نے یقینا نہیں سوچا ہوگا۔ 1880 میں افغانستان کے فرمانروا امیر عبدالرحمان نے بامیان میں بسنے…

یورپ: وحدت کے خواب سے شناخت پسند سیاست تک

یورپ کو دنیا میں ہم آہنگی اور اتحاد کی مثال کے طور پر پیش کیا جاتا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ سخت ترین اختلافات اور جنگخوں کی تاریخ کو بھلا یا جانا ممکن ہوتا ہے۔ سیاست، معیشت اور امن و امان پر باہمی تعاون ممکن بنایا جاسکتا ہے اور ایک مشترکہ…

مسلم سماج اور شناخت کی تلاش

شفیق منصور ’’تجزیات ‘‘ کے معاون مدیر ہیں، اوربین الاقوامی اسلامی یونیور سٹی سے عربی ز بان و ادب میں ایم فل کی سند حاصل کر رکھی ہے ، مذہب ، سماج اور جدید دور میں ان کی باہمی کشمکش اور اس سے جڑے مسائل ان کے پسندیدہ موضوعات میں سے ہیں۔ شفیق…

سعودی ولی عہد کا دورہ پاکستان: کچھ داؤ پر تو نہیں لگا؟

عرب بہار سے قبل ایک عرصہ تک مشرق وسطیٰ پر سعودی عرب کی گرفت مضبوط رہی ہے ۔اس کے بعد صورتحال تبدیل ہوگئی ہے۔چندسالوں کے اندر سعودی عرب نے اپنے کئی حلیف کھودیے ہیں جن کی فہرست طویل ہے ۔ان ممالک میں ترکی،قطر،مصر،تیونس ،الجزائر،اردن،یمن ،عراق…

سماجی ہم آہنگی، رواداری اور تعلیم

14 ،15جنوری2019 کوپاک انسٹی ٹیوٹ فار پیس اسٹڈیز کے زیراہتمام لاہور میں وسطی وجنوبی پنجاب کے کالجز اور جامعات کے اساتذہ کے ساتھ دو روزہ "علمی مکالمہ اور مشق"  کے عنوان سے ایک سیمینار کا انعقاد عمل میں لایاگیا۔سیمینار کی تعارفی نشست کا آغاز…

مابعد سیاسی اسلام، منزل ہے یا محض ایک پڑاؤ؟

مابعدسیاسی اسلام کی اصطلاح نوے کی دہائی میں وضع ہوئی۔اس وقت بعض مسلم وغیرمسلم مفکرین نے پیش گوئی کی تھی کہ سیاسی اسلام بطور فکر وتحریک اپنی جگہ بنانے میں ناکام ہوگیا ہے، آئندہ برسوں میں مذہبی سیاسی جماعتیں انسانی حقوق،آزادی اور تکثیریت…