مکالمہ مشکل ہے!

جب تک اپنے اپنے موقف کے تیقن کی چوٹیوں سے نیچے جھانکنے کی ہمت پیدا نہ کرلی جائے، مکالمہ مشکل ہے۔ جب تک اپنی ناک سے آگے دیکھنے کا حوصلہ نہ ہو، مکالمہ مشکل ہے۔ جب تک اپنی فیصلہ کن رائے کو تھوڑی دیر کے لیے معطل نہ کیا جاسکے، مکالمہ مشکل ہے۔ جب…

تبدیلی، اقامت، قیامت اور ہماری مشکل!

ہمارے ایک بہت مخلص، سادہ طبیعیت، لکھنے پڑھنے کا شوق رکھنے والے، دین دار اور آئیڈیلسٹ دوست ہیں۔ چند دن قبل فون پر یاد کیا، میں شہر سے باہر تھا۔ واپسی پر پھر یاد کیا، بڑی محبت سے بلایا اور اسلام آباد میں سیکٹر آئی نائن کے معروف چھپر ہوٹل، جو…

بچوں کو کیا پڑھائیں اورکیسے پڑھائیں؟

ماہرین تعلیم اور حکومتوں کے سامنے ایک بڑا اور بنیادی سوال یہ ہے کہ اس ''ڈیجیٹل ایج'' یعنی جدید ٹیکنالوجی کے اس دور میں بچوں کو کیا اور کیسے تعلیم دی جائے کہ اپنے علمی، ذہنی اور عملی امکانات اور رجحانات کے مطابق وہ بہترین انسان اور مفید شہری…

اختصاص اور تدریس کا مسئلہ ۔۔۔ اشکالات سے امکانات تک

ایک تصور یہ ہے کہ علم کا آغازاشیا کے نام جاننے سے ہوا۔ پھر جوں جوں انسان آگے بڑھتا گیا علم کا دائرہ پھیلنا شروع ہوا۔ اشیا کی ماہیت، خواص، اثرات سے بات بڑھتی ہوئی،تعلق، تاثر اور تاثیر سے ہوتی ہوئی، اختراع، ایجاد اور تخلیق تک جا پہنچی۔  یہاں…

فنون لطیفہ ۔۔۔ سماجی تبدیلی کا موثر ذریعہ؟

اقبال کا ایک معروف شعر ہے: رنگ ہیں سب ناتمام خون جگر کے بغیر؛ نغمہ ہے سودائے خام خون جگر کے بغیر عام طور پر اس شعر کو محنت کی عظمت واضح کرنے کے لئے پیش کیا جاتا ہے کیونکہ اس میں زندگی کے سارے رنگوں اور نغمگی کو خون جگر یعنی سخت محنت سے…

فنون لطیفہ :بے کاری کا مشغلہ یا تخلیقیت کا اظہار!

مشہور شاعر اور ادیب آسکر وائلڈ نے اپنے واحد ناول ’ ڈورین گرے کی تصویر‘ کے دیپاچے میں ایک جملہ لکھا کہ ’تمام آرٹ تقریبا بے کار ہے‘۔  اس ایک جملے نے آرٹ کی اہمیت اور افادیت کے بارے میں بڑا سوال کھڑا کردیا۔ آکسفورڈ یونیورسٹی کے ایک طالب علم نے…

انسانی خدا ـــ مستقبل کی ایک مختصر تاریخ (4)

ایک اچھی خبر یہ ہے کہ دنیا سے جنگوں کا خاتمہ ہو رہا ہے۔ تاریخ کے تمام ادوار میں جنگ ایک لازمی اور امن ایک عارضی حقیقت تھی۔ بین الاقوامی تعلقات میں جنگل کا قانون رائج تھا، جس کے مطابق دو ملکوں کے درمیان حالت امن میں بھی جنگ کا آپشن ہمیشہ…

انسانی خدا ـــ مستقبل کی ایک مختصر تاریخ(3)

قحط کے بعد انسانوں کے دوسرے سب سے بڑا دشمن وبائی امراض تھے ،جو کسی ایک علاقے میں پھیلتے تو انسانوں کی نسلوں کی نسلیں تباہ کردیتے۔ وہ گنجان آباد شہر جہاں تاجروں اور سیاحوں کی بہتات ہو ،وہ اگر ایک طرف  انسانی تہذیب و ثقافت کا مرکز بن جاتے تو…

انسانی خدا ـــ مستقبل کی ایک مختصر تاریخ (2)

صرف چند صدیاں قبل دنیا میں قحط ایک بہت بڑی آفت تھی۔1694میں فرانس کے شہر بیواس میں ایک فرانسیسی افسر نے اس وقت فرانس میں جاری قحط کے اثرات اور خوراک کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے بارے میں لکھا کہ اس پورے ضلعے میں لاتعداد لوگ اتنے غریب ہیں جنہیں…

انسانی خدا ـــ مستقبل کی ایک مختصر تاریخ(1)

آج کل ایک بہت دلچسپ کتاب زیرمطالعہ ہے جو زمین پر زندگی کے بارے  میں سوچنے کے کچھ نئے رخ سامنے لارہی ہے۔ اسرائیلی ماہر تاریخ و سماجیات یووال نوح ہراری کی کتاب ’ہومو ڈیوس کی کتاب (انسانی خدا ۔۔ مستقبل کی ایک مختصر تاریخ) اپنی پہلی اشاعت کے…