میٹرک اوراو لیول کے اسلامیات کے نصابات کا تقابلی تجزیہ

پاکستان میں دسویں درجے کی تعلیم میں او لیول اور میٹرک، دو تعلیمی نظام رائج ہیں۔ میٹرک کا نصاب اور امتحان قومی وفاقی بورڈ علاوہ صوبائی تعلیمی بورڈز کے تحت بھی  ہوتاہے جب کہ او لیول کا نصاب اور امتحان زیادہ تر کیمبرج یونیورسٹی لندن کے تحت…

خود اعتمادی اور بے اعتمادی کا فرق

کسی حادثے یا ناکامی کی صورت میں خود اعتمادی اور بے اعتمادی کے رد عمل میں بہت فرق ہوتا ہے۔ خود اعتمادی ایسے کسی منفی واقعہ سے سبق سیکھتی، اس کا سامنا کرتی اور اس پر قابو پاتی ہے، جب کہ بے اعتمادی ایسے کسی واقعے کے دوبارہ ہو جانے کے خوف کا…

خواتین کی طرف سے ہراسانی کا مسئلہ

ہراسانی محض جنسی نوعیت کے کسی محرک کا نتیجہ نہیں ہوتی، یہ طاقت اور فائدہ کشی کی نفسیات سے پھوٹتا رویہ ہے جو کئی صورتوں میں ظاہر ہوتا ہے۔ فریق مخالف کی حق تلفی، اس کی خلاف مرضی، اس سے فائدہ مندی یا لذت اندوزی کے بعد اسے ایسے خوف زدہ کرنا کہ…

اقلیت کے خلاف سماجی جبر تبلیغ کے عمل کو غیر مؤثر بنا دیتا ہے

احمدی پاکستان کے آئین میں غیرمسلم قرار ہیں اور ملک کا ہر مسلمان یہی عقیدہ رکھتا ہے۔ تاہم قادیانیت کے وجود کے حوالے سے ایک خاص طرح کا مزاج بھی پایا جاتا ہے جس کی بنا پر ہمیشہ تناؤ کی کیفیت نظر آتی ہے۔ اس تناؤ کا مظاہرہ ہمیں گلیوں بازاروں میں…

قومی و مذہبی اظہاریوں کا خلطِ مبحث اور مصنوعی بیانیہ

ڈاکٹر عرفان شہزاد فاطمہ جناح ویمن یونیورسٹی اسلام آباد کے شعبہ اسلامیات میں استاد ہیں۔زیرنظرمضمون میں انہوں نے اس مصنوعی بیانیے کو موضوع بنایا ہے جسے اپنانے کی وجہ سے پاکستان میں مختلف مذہبی شناختوں کا حامل سماج ایک سرزمین پر رہنے کے باوجود…

عقائد قومی شناخت نہیں ہوتے

خدا کے ہاں نجات یافتہ اور سزا یافتہ کسی خاص ظاہری شناخت کا حامل شخص نہیں بلکہ خاص رویوں کا حامل شخص ہے۔ عقیدے سے زیادہ رویے کا مسلم ہونا یا نہ ہونا اصل معیار ہے جس پر فلاح و کامیابی کے وعدے کیے گئے ہیں۔ خدا نے عذاب کی وعیدیں محض غیر مسلموں…

تعلیم یافتہ مڈل کلاس اشرافیہ

اشرافیہ صرف جاگیردار، سرمایہ دار، حکمران اور سیاست دانوں میں منحصر نہیں ہوتی۔ جس منظم گروہ کو بھی سماج میں کسی بھی لحاظ سے طاقت اور رسوخ حاصل ہوجاتا ہے اور وہ عوام سے ہٹ کر ایک گروہ یا طبقے کی صورت اختیار کر لیتا ہے وہ اشرافیہ ہے۔ طاقت کی…

تعلیمی کاروبار اور اس کی اخلاقیات

ہمارے ہاں عوام، جن میں تعلیم یافتگان کا بھی بڑا طبقہ شامل ہے، اس نظریے پر یقین رکھتے ہیں کہ تعلیم کو کاروبار بنا لینا کوئی قابل تحسین نہیں ہے۔ تعلیم کی اُجرت نہیں ہونی چاہیے یا اسے بہت کم ہونا چاہیے۔ گویا کراہت کے ساتھ اضطراری طور پر اسے…

سیاسی تبدیلی پارلیمنٹ کے راستے سے لائی جائے

مولانا فضل الرحمن کی شہرت جمہوریت اور آئین پسند منجھے ہوئے سیاست دان کی ہے۔ ان کا ایجنڈا درست ہے یا غلط، اس سے قطع نظر، ان کا حکومت گرانے کا اعلان اوراس کے لیے ان کا دھرنے دینے کے اقدام کی جمہوری نظام میں کوئی گنجائش نہیں ہے۔ کسی بھی گروہ…

سانحہ گھوٹکی: مداوا یا مزید نفرت؟

ملک میں اقلیتیں مسائل کا شکار ہیں، یہ حقیقت ہے۔ موقع پا کر ان کی جان مال آبرو پر حملے کرنے والے فسادی افراد بھی سماج میں موجود ہیں، یہ بھی سچ ہے۔ لیکن ان کے دکھ اور ان کے خوف کی وجہ سے ان سے ہمدردی رکھنے والے بھی اسی سماج میں موجود ہیں، یہ…