علی اکبر ناطق کا افسانوی مجموعہ “قائم دین” : یو بی ایل ایوارڈ کی ساکھ پر سوالیہ نشان

علی اکبر ناطق کا افسانوی مجموعہ "قائم دین" تقریباً دو سال سے میری لائبریری میں موجود تھا۔ اسے یو بی ایل ایوارڈ اور نقادوں سے سندِ اعتبار ملنا گاہے مجھے اس کے مطالعے پر ابھارتا تھا، لیکن عدالتی مصروفیات اور وقت کی قلت آڑے آتی رہی۔ وبا کے…

جاہل عوام اور پڑھی لکھی حکومتیں

لیجئے حضور، غربت، عسرت، بے روزگاری، بھوک، سیاسی ابتری، سماجی و طبقاتی تفریق، معاشی عدم مساوات، تعلیمی و طبی پس ماندگی اور معاشرتی بدحالی اعزازنے کے بعد عوامِ پاکستان کے سینے پر حکومتِ وقت نے جہالت کا تمغا بھی سجا دیا ہے۔ ویسے تو روزانہ کی…

آمنہ مفتی کا ناول “پانی مر رہا ہے” : اردو ناول مر رہا ہے

موسمی نقادوں اور مبصروں نے عظیم، اہم، رجحان ساز، شاندار اور عمدہ ناول جیسی اصطلاحات کو ان کے بے موقع و بے محل کثرتِ استعمال سے بے وقعت اور حقیر کر دیا ہے۔  قارئین ان صاحبان کے جھوٹے تبصروں اور گمراہ کن آراء کی بدولت ناقص ادب پڑھ پڑھ کر اپنا…