میاں رضاربانی کےکھوئے ہوئے لوگ

یہ مٹے ہوئے عام لوگ رضا ربانی کی کہانیوں کے کردار ہیں۔ کوئی گداگر ہے، تو کوئی مزدور، کوئی عصمت فروش عورت ہے ،تو کوئی اغوا شدہ بچہ، کوئی بے روزگار ہے تو کوئی غربت کا مارا ہوا بے کس و مجبور۔لیکن یہ محض زندگی کی کٹھنائیوں کے سامنے ہتھیار ڈال…

مطالعے سے زیادہ تجربے اور مشاہدے کا قائل ہوں

تخلیقی عمل سے متعلق معروف ناول نگار فاروق خالد سے گفتگو فاروق خالد سے میرا اولین تعارف ان کے ناول سیاہ آئینے سے ہوا جیسا کہ کسی بھی اچھے قلم کار سے تعارف کی صورت ہوسکتی ہے۔ پرانی کتابوں کے بازار میں، جو انارکلی بازار میں ہر اتوار کو برپا…

بم دھماکہ

اس نے بتایا کہ کیسے دہشت گردوں نے خودآکر اسے دھمکی دی اور جب اس نے انھیں روکنے کی کوشش کی تو وہ فرار ہوگئے۔ پچیس پچیس تیس تیس سال کے دو نوجوان تھے، چہروں پر سبز چوکور خانوں والے سفید رومال ڈھاٹوں کی صور ت میں باندھے ہوئے کہ ان کی صورتیں…

تقسیم ہند کے فسادات اور بھیشم ساہنی کا ناول تمس

بھیشم ساہنی کا تعلق چونکہ پوٹھوہار کے علاقے سے تھا، اور یہیں سے ہجرت کرکے وہ انڈیا گئے، تو اس ناول کا لوکیل بھی بنیادی طورپر راولپنڈی اور اس کا گردونواح کا علاقہ ہے۔ تقسیم اور اس سے جڑے ہوئے ہجرت اور فسادات کے واقعات کی ہولناکی نے سرحد کے…

اردو، ناول اور غزل:چند خیالات(آخری حصہ)

ہمیشہ اسٹیبلشمنٹ اور بالخصوص مسلم اشرافیہ کو غزل ہی موافق آئی جس کے موضوعات تب اور اب بھی بیشتر خاص طور پر سیاست اور مسلمانوں کی علمی، تہذیبی اور ذہنی پسماندگی سے غیر متعلق رہے۔ زبانیں اپنی بقا کے لیے تشکیلی عمل میں گرفتار رہتی ہیں اور یہی…

اُردو ناول اور غزل :چند خیالات(دوسرا حصہ)

اردو کا پہلا قابل ذکر شاعر ولی دکنی اٹھارھویں صدی کے آغاز میں سامنے آتا ہے۔ یہ وہ دور ہے جب برصغیر میں مسلمانوں کے سیاسی تنزل کا آغاز ہوچکا تھا، ان کی حکومت کی جڑیں اکھڑ چکی تھیں . اردو ادب کی ابتداءالبتہ غزل سے ہوئی۔اس کی ایک وجہ تو یہ بھی…

اردو، ناول اور غزل:چند خیالات

پہلا باقاعدہ ناول مراة العروس کو مانا جاتا ہے جو 1869ء میں شائع ہوا۔یہی مرزا غالب کا سال وفات بھی ہے۔ یوں اردو نثر اور ناول کی کم و بیش ایک ہی عمر مانی جا سکتی ہے اور یہ ڈیڑھ سو برس سے زیادہ نہیں ہے۔ اردو میں لگ بھگ ڈیڑھ سو برسوں پر پھیلی…

مابعدجدیدیت: چند منشتر خیالات

مابعد جدیدیت کی اصطلاح مابعد جدید زمانے کی شاید سب سے زیادہ غلط سمجھی گئی اصطلاحات میں سے ایک مانی جا سکتی ہے۔ بیسویں صدی کے وسط میں جب مابعدجدیدیت کی اصطلاح فلسفہ کے ساتھ ساتھ مصوری، موسیقی ، تعمیرا ت کے فن، اور ادب میں بھی نئے طرز احساس…

المیہ کا سفر

'المیہ کا سفر' نام دے کر اشفاق سلیم مرزا صاحب نے اپنی کتاب کے لیے آئندہ ہونے والی گفتگو کو خود ہی ایک سمت دینے کا اہتمام کیا ہے۔ یہ حقیقت ہے کہ دنیائے ادب میں المیہ کا آغاز یونانی ڈرامہ کو مانا جاتا ہے۔ جب کہ یہ کتاب یونانی کلاسیک ڈراموں کے…

بس کے ایک مسافر کی کہانی

وہ دروازے کے برابر ہی ایک سیٹ پر بیٹھا تھا۔ تبھی ا س کی نظر کھڑکی کے پاس ہی لگی ایک تختی پر پڑی، لکھا تھا، ’معذور افراد کے لیے۔‘ تختی پر اشارہ اسی کی سیٹ کی طرف تھا جس پر وہ بیٹھا تھا۔ بس کی بریکیں شاید ہوا خارج کرتی تھیں کیوں کہ جب انھیں…