img Read More

شام میں کون کس کے خلاف برسرِ پیکار ہے؟

میڈیا رپورٹ

یہ مارچ دوہزار گیارہ تھا جب صدر بشار الاسد کی حکومت کے خلاف پُراَمن احتجاج ہوااور اُس میں شام کے تنازعہ نے جنم لیا،لیکن یہ ایک پیچیدہ جنگ میں اُس وقت تبدیل ہوا ،جب جہادی گروپوں ،علاقائی اور بین الاقوامی طاقتیں اس میں شامل ہوئیں ۔اس تنازعہ میں دولاکھ نوے ہزار سے زائد افراد مارے گئے اور آدھی سے زیادہ شامی آبادی گھر سے بے گھر ہوئی ہے ۔رواں ہفتے ترکی نے اپنی فوجوں کو داعش اور کردفورسز کی پیش قدمی کو روکنے کے لیے بھیجا۔

img Read More

قومی بیانئے کی تشکیل نو کا مجوزہ خاکہ

میڈیا رپورٹ

پاکستان میں انتہا پسندی،دہشت گردی،سیاسی و سماجی ابتری عدم برداشت اور رویوں میں عمومی بگاڑ کا ایک بڑا سبب ان بیانیوں کو قرار دیا جاتا ہے،جس کی نشونما ریاست نے تعلیمی نظام، سیاسی و سماجی اصطلاحات،اندرونی اور خارجہ پالیسیوں کے بنیادی ہدف کے طور پر کی۔ سیکورٹی، سماجی اور مذہبی اشرافیہ نے ان بیانیوں کو مزید تقویت پہنچائی جن کی بنیاد تفریق پر تھی۔ریاست کے تناظر، ویڑن ضروریات، اہداف پر بحث سے قطع نظر گذشتہ 69 سالوں میں ایک ایسا قومی مزاج اور بیانیہ تشکیل پایا ہے،جس سے اب نہ تو ریاست مطمئن ہے اور نہ ہی سماج۔

img Read More

مدر ٹریسا:مسیح کی بابرکت بھیڑ روحانیت کے اعلیٰ مقام پر فائز

نوشین جاوید

“بھائیو اور بہنو!اس دور میں بھی خدا اولیا کو جنم دیتا ہے جن میں سے کچھ لوگ خود کو وقف کر دیتے ہیں جیسا کولکتہ کی مدر ٹریسا نے کیا،جنہیں آج ہم ان لوگوں میں شامل کر رہے ہیں جن پر خدا نے اپنی رحمت اور برکت نازل کی”۔ 2003ء میں پاپائے روم جان پال دوم اس شخصیت کو خراج عقیدت پیش کر رہے تھے جس نے بھارت کے شہر کولکتہ میں نادار لوگوں کی خدمت کے لیے زندگی بسر کر دی۔

img Read More

ناول کو بچانے کے لیے افسانوی طرزِ فکر

میڈیا رپورٹ

یہ گرمیوں اور عظیم ناول کے صفحات کے ذریعے جادوئی سفر سے لطف اندوز ہونے کا وقت ہے ۔مصیبت یہ ہے، یہاں تک کہ پبلشرز ،ادبی ثقافت کے محافظ اور ذوق کے حامل اتنی قلیل مقدار میں جیسا کہ سانپ کے دانت ،عظیم ناولوں کے متعلق کھوج لگارہے ہیں ۔اس مشکل وقت میں ناول بے وقار ہوا ہے،جبکہ روایتی پبلشر کے لیے منڈی مارکیٹ چورہ چورہ ہوئی ہے۔اس سال ہانگ کانگ کتاب میلہ میں عالمی تشہیری فورم نے رہنمائی کے لیے ایک نئی روشنی کو تلاش کرنے کی امید میں توجہ کے مرکز کو آن لائن ناول کی طرف تبدیل کر دیا ہے

img Read More

بلوچستان میں بلوچ اور پختون بحث پھر سے شروع

ضیاء الرحمٰن

بلوچستان کے وزیربرائے داخلہ اورقبائلی امورسرفرازبگٹی کے افغان مہاجرین کے حوالے سے حالیہ بیان نے صوبے میں بلوچ اورپختون سیاسی جماعتوں کے مابین آبادی (demography)کی تبدیلی کی پرانی اورتلخ بحث دوبارہ شروع کردی ہے۔ سرفرازبگٹی نے افغانستان کی خفیہ ایجنسی نیشنل ڈائریکریٹ آف سیکیوریٹی (این ڈی ایس) کے لئے مبینہ طورپرکام کرنے والے چھ افراد کی گرفتاری کے موقع پرکہا کہ ’بلوچستان میں رہنے والے افغان مہاجرین صوبے میں دہشت گردی کی کاروائیوں میں ملوث ہے۔ پاکستان نے لاکھوں افغان شہریوں کی دہائیوں تک میزبانی کی ہے لیکن اب وقت آگیا ہے کہ افغان مہاجرین واپس چلے جائیں‘۔

img Read More

سوات میں زمین اور جنگلات کے تصّرف پر ’رواج ‘ کا راج

زبیر توروالی

’’ جنگلات گھنے اور سایہ دار ہیں۔ پھل اور پھول کثرت میں ہیں “۔ یہ بات 629ء میں چینی یاتری زوان زانگ (XuanZang) نے سوات کے اپنے دورے کے بارے میں لکھی۔ چینی یاتری کے اس قول کو سوات سے تعلق رکھنے والے مورّخ ڈاکٹر سلطانِ روم نے اپنی نئی کتاب ’’سوات میں زمین اور جنگلات کا انصرام ؛ قبائیلی نظام سے ریاست سوات اور پاکستان میں منتقلی“ (Land and forest governance in Swat; transition from tribal system to State to Pakistan) میں نقل کیا ہے۔ یہ کتاب اسی سال اوکسفورڈ یونیورسٹی پریس (Oxford University Press) نے شائع کی ہے۔

img Read More

کراچی کی سیاست کے بدلتے تیور
تقسیم ہو تی ایم کیو ایم اور اسٹیبلشمنٹ کا بڑھتا ہوا اثرورسوخ

ضیاء الرحمٰن

صوبہ سندھ کے دوبڑے شہروں کراچی اورحیدرآباد میں اثرونفوس رکھنے والی سیاسی جماعت متحدہ قومی موومنٹ گزشتہ دو تین سالوں سے کئی مشکلات کاسامنا کررہی ہے جس میں لندن میں پارٹی رہنما ڈاکٹرعمران فاروق قتل اورمنی لانڈرنگ کے مقدمات کے معاملات، کراچی میں ستمبر 2013 ء میں رینجرزکی سرپرستی میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن میں پارٹی رہنماؤں و کارکنوں کی گرفتاریاں اورمقدمات اور نتیجتا شہرکو ’منٹوں میں بند‘ کرنے کی قوت سے محرومی، حکومت کی جانب سے پارٹی سربراہ الطاف حسین کی تقریر اورتصویرپرذرائع وابلاغ میں پاپندی اورکراچی اورحیدرآباد میں دسمبرمیں منعقدہ بلدیاتی انتخابات میں اکثریت حاصل کرنے کے باوجود ان دونوں شہروں سے میئرشپ کے انتخابات کا نہ ہونا شامل ہیں۔ مگرحال ہی میں ایم کیوایم کے ناراض رہنماؤں مصطفی کمال اورانیس قائم خانی کی شہرمیں واپسی، پارٹی سے بغاوت اورنئی جماعت کے اعلان کے بعد پارٹی کو ایک نئے مگراندرونی بحران کا سامنا کرناپڑرہاہے جہاں اب تک دواراکین سندھ اسمبلی اوررابطہ کمیٹی کے دوسابق اراکین نے پارٹی سے علیحدگی اختیارکرکے نئے دھڑے کی حمایت کا اعلان کیاہے۔